Painful tears in Urdu Poems by Darshita Babubhai Shah books and stories PDF | دردناک آنسو

Featured Books
  • REVENGE

    CHAPTER 1: THE RIVALRY BEGINS Ek baar Pakistan ke sheher Kar...

  • دل کی بات

    اپنے ہونٹوں پر مسکراہٹ رکھیں ہمت کو ذہن میں رکھیں   صرف...

  • دماغی پرندہ

    دل کی باتیں لبوں تک پہنچیں تو قیامت آ جائے گی۔ ہونٹوں پر خفی...

  • موسم کی پہلی بارش

    دنیا کٹھ پتلیوں کا میلہ ہے۔ یہ زندہ رہنے کے لئے ایک گندگی ہے...

  • دل کی کائنات

    آپ دل کی دنیا کے سردار بن گئے ہیں۔ تم نے محبت کی پارٹی لگائی...

Categories
Share

دردناک آنسو

غم میں بھی مسکرانا سیکھو

دردناک آنسوؤں کو سنبھالنا سیکھیں۔

 

پیاری میٹھی مسکراہٹ

اپنے ہونٹوں کو سجانا سیکھیں۔

 

آنکھوں کو زخمی کرنے کا نشہ۔

آنکھوں میں دیکھنا سیکھو

 

ہمارے اپنے لوگوں کی

دل جیتنا سیکھو

 

دنیا سے الگ ایک شناخت بنائیں۔

قدر کرنا سیکھیں

 

ہجوم میں موتیوں کے ہار کی طرح

اپنی جگہ بنانا سیکھیں۔

 

پریشان ہو تو جان سے زیادہ عزیز

محبت کے ساتھ منانا سیکھو

16-1-2023

 

کوئی بات نہیں، محبت رکھو

اچھے لوگوں کی صحبت رکھیں

 

میں معصوموں پر بے شمار خواہشیں جمع کرتا رہا ہوں۔

اپنی محبت رکھو

 

یہاں کائنات میں بہت اکیلے رہتے تھے۔

میری آپ سے گزارش ہے کہ اس قربت کو برقرار رکھیں۔

 

ملاقات کی رات میں ملاقات کے وقت۔

جدائی میں آنسوؤں کا شربت رکھیں گے۔

 

صبح، شام اور رات میں ایک مالا ہے۔

روح کو روح سے جوڑ کر رکھیں۔

17-1-2023

 

دل میں خواہشوں کا میلہ ہے۔

دنیا کے میلے میں اکیلا

 

کسی کے تانبے میں نہ رہو۔

معصوم کو پاگل پن کا سامنا کرنا پڑا

 

دوست آج کسی کی یاد میں

میری آنکھوں میں آنسوؤں کی ندی ہے۔

 

چھوٹی چھوٹی باتوں پر پریشان ہو جاتا ہے۔

یہ معصومیت کی گندگی ہے۔

 

صلح کا پیغام بھیجا گیا ہے۔

آج پھر سے جوگاد کھیلا ہے۔

18-1-2023

 

محبت ہر کسی کو نہیں ملتی

خواہشات کی پیاس نہیں مٹتی۔

 

دوست بغیر روح سے روح سے محبت۔

دلوں کا باغ نہیں کھلتا

 

آپ جو چاہیں گے، تام برقرار رہے گا۔

امیدیں زندگی نہیں بھرتیں۔

 

سانس رک جاتی ہے مگر وقت کی سوئی

جب کوئی چلا جائے گا تو نہیں رکے گا۔

 

ہجوم میں کہیں نظر آئے گا تو نظر آئے گا۔

اب بھی دیکھنے کی امید نہیں چھوڑے گی۔

19-1-2023

 

اگر آپ ملنا چاہتے ہیں تو مجھے بتائیں۔

ایک بار پھر دیکھو

 

دوست، چاہے تم مجھے یاد نہ کرنا چاہتے ہو۔

یاد رکھنا بھول جائیں تو بھی کریں گے۔

 

دوستوں کی محفل سجی ہے۔

اگر رات میں نہ ہو تو فجر کر لیں۔

20-1-2023

 

محفلوں میں گپ شپ ہوتی تھی۔

وہ سکون اور سکون کھونے لگی۔

 

نہ آنے والوں کا راستہ دیکھا

انتظار کر کے سو جائیں گے۔

 

محبت سے بھری سجاوٹ کا برتن

دل میں امید کے بیج بونے لگے

 

چار دن ملاقات ہوئی۔

یادوں کا بوجھ اٹھانے لگا

 

یادیں ہی سہارا بن گئیں۔

زندگی چل رہی ہے

21 -1 -2023

 

محبت کو اڑنے دو

چلو خوابوں میں رہتے ہیں

 

کسی کو پرواہ ہے

میں تمہیں ساری زندگی الجھا کر رہنے دوں گا۔

 

ایک دوسرے کے ساتھ مہربان ہو

خوبصورت دنیا کو رہنے دو

 

مخبروں سے دور

آپ کو الگ گھر بنانے دیں گے۔

 

سب کو پرواز کرنے کے لئے

آسمان کو کھلا رہنے دو

 

نفرت کو محبت سے مارو

خیلہ گلستان رہنے دو

 

گڈ لک یو

اللہ اپ پر رحمت کرے

22-1-2023

 

ہر وقت مسکرانا سیکھیں۔

اپنے ہونٹوں پر مسکراہٹ رکھنا سیکھیں۔

 

دنیا محبت کا پھول بن گئی ہے۔

نفرت کو جلانا سیکھو

 

اپنے مزے میں جیو

اپنے آپ کو آزمانا سیکھیں۔

 

ذہنی سکون کے لیے

آنکھ سے رابطہ کرنا سیکھیں۔

 

اپنے ہی پیاروں کو دھوکہ دیتے ہیں۔

تعلقات کو برقرار رکھنا سیکھیں۔

 

کائنات کا آتش فشاں

آگ میں رہنا سیکھو

 

اگر آپ ایک طاق بنانا چاہتے ہیں، تو ایل

منفرد گھر بنانا سیکھیں۔

 

اپنے ساتھ ایماندار رہو

سچ بتانا سیکھو

 

پھولوں کی طرح خوشبو پھیلانا

دل سے دل رکھنا سیکھو

 

اگر آپ رشتوں کی اہمیت جانتے ہیں۔

اگر ہاں، تو آپ غصے کو منانا سیکھ جائیں گے۔

23-1-2023

 

زخم دل میں گہرے رکھے ہیں۔

اور تنہائی کا پہرہ دے۔

 

محبت میں امن کے لیے

اداسی میں خوش چہرہ رکھیں

 

دوستوں کے مذاق کے لیے۔

اجتماعات کو جاری رکھیں

 

کائنات میں نام بلند رکھنے کے لیے

اب شہر چمکتے رہیں

 

دنیا والوں کی لغو باتیں۔

سننے سے کان بہرے رہتے ہیں۔

24-1-2023

 

آنکھیں پڑھنا جانتے ہیں۔

پتنگوں کی طرح اڑنا جانتے ہیں۔

 

میں نے بھیڑ کے ساتھ چلتے دیکھا ہے۔

اب میں جانتا ہوں کہ اکیلے کیسے چلنا ہے۔

 

دنیا کی دنیا داری دیکھی۔

اپنے آپ کو دھوکہ دینا جانتے ہیں۔

 

زندگی کو بھرپور طریقے سے گزاریں گے۔

وقت کے ساتھ موافقت کرتا ہے۔

 

دنیا ہر لمحہ رنگ بدلتی ہے۔

کانٹوں کے ساتھ جینا جانتے ہیں۔

 

لوگ ماسک پہن کر جی رہے ہیں۔

میں موسم کی طرح بدلنا جانتا ہوں۔

25-1-2023

 

ملاقات کی رات ادھوری رہ گئی۔

اور ملاقات ادھوری رہ گئی۔

 

میں گفتگو میں اچھا نہیں ہوں۔

دو میٹھی باتیں ادھوری رہ گئیں۔

 

میں زندگی بھر کے لیے ذہنی سکون چاہتا تھا۔

تو کائنات ادھوری رہ گئی۔

 

وہ آنکھوں سے چھلک رہی تھی۔

پیاری بارش ادھوری رہ گئی۔

 

مہارت کے بغیر محبت میں گر گیا

دوست کا تحفہ ادھورا رہ گیا۔

26-1-2023

 

اکیلے رہنے کا ہنر سیکھیں۔

ایک بار جب آپ نظر سے سیکھیں۔

 

میں جہاں بھی ہوں آپ کو کئی قسم کے لوگ ملیں گے۔

بس بات کرنا سیکھو

 

موسم خزاں یہاں ہے

جدائی میں تنہا سفر کرنا سیکھو

27-1-2023

 

سورج کی طرح گرم ہونا ضروری ہے۔

محبت کی گرمی میں سکون کھو دینا چاہیے۔

 

سچی امیدیں بہت دیر سے پوری ہوتی ہیں۔

رات بھر سکون سے سونا چاہیے۔

 

کسی دوست کا کندھا ملے تو

ایسا کرنے کے لیے دل کو ہلکا سا رونا چاہیے۔

 

دنیا اب بھی امید پر قائم ہے۔

بے پناہ محبت کا بیج بونا چاہیے۔

 

لامحدود محبت میں دیوانے کو

مجھے اپنے دل کو خوش کرنے کے لیے ایک کھلونا چاہیے۔

28-1-2023

 

ملک کے لیے خون بہانے والے کو سلام۔

اپنے ملک کا نام کائنات میں بلند کرو گے۔

 

اس کا شکریہ جس نے خود کو سینے میں گولی مار لی۔

اور پیاروں سے قطع نظر تاریخ رقم کی۔

 

موت کی گود میں امن و سکون کے ساتھ

ماں کی محبت اور ماں کے نام کو چار چاند لگا دو۔

28-1-2023

 

زندگی میں خوش رہنے کے لیے مثبت سوچ رکھیں۔

آگے بڑھنے کے لیے مثبت سوچ رکھیں۔

 

 

امتحان کے لیے خود کو سمجھداری سے تیار کریں۔

ٹاپ نمبر حاصل کرنے کے لیے نتیجہ سوچتے رہیں۔

 

ہاتھ کی لکیروں سے نہیں محنت سے کامیاب بنو۔

سخی مشہور ہونے کے لیے علامتی سوچ رکھیں گے۔

 

جو کچھ ہو رہا ہے اور جو ہونے والا ہے اچھا ہی ہو گا۔

خدا کی رضامندی کے لیے روحانی سوچ رکھیں۔

 

رات کو دوستوں کی مجلس میں بیان کرنے والا

نظموں اور غزلوں میں زندگی بھر شاعرانہ سوچ رکھیں۔